لاہور ( مدارنیوزٹی وی ) صوبہ پنجاب میں سموگ کے تدارک کے لیے لاہور ہائی کورٹ نے آلودگی کا باعث بننے والی فیکٹریوں کو سیل کرنے کا حکم دے دیا ۔
لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے شیراز ذکاء ، آفتاب ورک اور ابو ذرسلمان خان نیازی کی درخواستوں پر سماعت کی ، جس میں سموگ کی روک تھام کیلئے اقدامات کرنے اور مکمل لاک ڈوان کی استدعا کی گئی ۔
دوران سماعت عدالتی حکم پر میئر لاہور کرنل ریٹائرڈ مبشر جاوید لاہور ہائیکورٹ میں پیش ہوئے جہاں انہوں نے موقف اپنایا کہ ان کو صرف 8 فیصد بجٹ استعمال کرنے کی اجازت دی گئی ہے جب کہ مکمل اختیارات بھی نہیں دیے جا رہے ۔ اس پر عدالت نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ آگے الیکشن آ رہے ہیں آپ لاہور کی خدمت کریں ، لاہور کو ایسے ہی صاف کرنا ہے ، جیسے ہمارا گھر ہوتا ہے ، جسٹس شاہد کریم نے مئیر لاہور کو فوکل پرسن مقرر کرنے کا بھی حکم دے دیا ۔
دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے اسموگ سے بچاؤ کیلئے ایئرپالیسی مرتب کرنے کی منظوری دے دی ، عمران خان نے کہا ہے کہ پنجاب اور خیبرپختونخواہ کے شہر دسمبر میں اسموگ کی زد میں ہوں گے، شہروں کی ضروریات کے تحت کلین ایئرپالیسی بنائی جائے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اسموگ سے نمٹنے کیلئے اہم اجلاس ہوا، اجلاس میں آئندہ دنوں اسموگ کے نقصانات سے متعلق بریفنگ دی گئی ، بریفنگ میں بتایا گیا کہ پنجاب اور خیبرپختونخواہ کے شہر دسمبر میں اسموگ کی زد میں ہوں گے، اجلاس میں وزیراعظم نے آئندہ دنوں اسموگ کے نقصانات سے بچاوٴ کیلئے پالیسی تیار کرنے کی منظوری دی، وزیراعظم نے اسموگ سے بچاوٴ کیلئے گزشتہ سال کی پالیسی پر عمل کرنے کی بھی ہدایت کی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here